بیمار عبادت گزار NafseIslam | Spreading the true teaching of Quran & Sunnah

This Article Was Read By Users ( 1873 ) Times

Go To Previous Page Go To Main Articles Page



حضرتِ سیِّدُنا وَہْب بن مُنَبِّہ رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہِ سے منقول ہے:
دوعابِد یعنی عبادت گزار پچاس سال تکاللہ عَزَّ وَجَلَّ کی عبادت کرتے رہے ،پچا سویں سال کے آخِر میں ان میں سے ایک عابد سخت بیمار ہو گئے،وہ بارگاہِ ربِّ باری عَزَّ وَجَلَّ میں آہ وزاری کرتے ہوئے اس طرح مُلْتَجِی ہوئے(یعنی التجا کرنے لگے):
٭ اے میرے پاک پروردگار عَزَّ وَجَلَّ! میں نے اتنے سال مسلسل تیرا حکم مانا، تیری عبادت بجا لایا پھر بھی مجھے بیماری میں مبتلا کردیا گیا، اس میں کیا حکمت ہے ؟ میرے مولیٰ عَزَّ وَجَلَّ! میں توآزمائش میں ڈال دیا گیا ہوں ۔
٭ اللہ عَزَّ وَجَلَّ نے فرشتوں کو حکم فرمایا:ان سے کہو،٭تم نے ہماری ہی امداد واحسان اور عطا کردہ توفیق سے ہماری عبادت کی سعادت پائی، باقی رہی بیماری!تو ہم نے تم کو اَبرار کا رُتبہ دینے کے لئے بیمار کیا ہے۔تم سے پہلے کے لوگ تو بیماری ومصیبتوں کے خواہش مندہوا کرتے تھے اورہم نے تمہیں بِن مانگے عطا فرمادی ۔٭

( عُیُون الْحِکایات حصّہ ۲ ص۳۱۲ بتصرّف )